کویت کی صحرائی فضا میں ایک تفریحی پروگرام

کویت کی صحرائی فضامیںایک ایمان پرور دن گذارنے کے لیے سلیل میںواقع لجنة احیاءالتراث الاسلامی شاخ جہرا کے خیمہ میں مسلم کمیونٹی کے ساتھIPC  کے نومسلموں کاتفریحی پروگرام منعقدکیا گیا جس میں ایک بڑی تعداد میں ہندو پاک کے مسلم مردوخواتین کے علاوہ نومسلم مرد وخواتین اور بعض غیرمسلموں نے شرکت کی۔ مختلف ایمانی مواعظ، تفریحی اور ثقافتی سرگرمیوںپرمشتمل یہ پروگرام صبح آٹھ بجے سے شام چار بجے تک کامیابی کے ساتھ چلتا رہا ۔ پروگرام کا آغاز تلاوت کلام پاک سے ہوا ،اس کے بعد ”اللہ کو راضی کرنے والے اعمال “ کے موضوع پر شیخ ظفراللہ مدنی نے اپنے خطاب میں فرمایا کہ اخلاص،نماز کی پابندی ،بکثرت دعا،والدین کی اطاعت ، حسن اخلاق یہ وہ اعمال ہیں جن سے اللہ کی رضامندی حاصل ہوتی ہے ۔ آپ نے مزید فرمایاکہ کسی بھی عمل کی قبولیت میں اخلاص اورمتابعت کا پایاجانانہایت ناگزیر ہے ۔ شیخ صفات عالم محمدزبیرتیمی صاحب نے ”بلندہمتی : ترقی کی کنجی ہے “ کے موضوع پرلکچر دیاجس میں آپ نے بلندہمتی اورپست ہمتی کے مظاہر کی وضاحت کرتے ہوئے فرمایاکہ بلندہمت  صاحبِ ایمان ہی ہوسکتا ہے جس کی کوششیں جنت کے حصول کے لیے ہوتی ہیں۔ آپ نے اللہ کے رسول ا ، ابوبکرصدیق ا، عمرفاروق ا اورعمربن عبدالعزیز  کی ہمتوں کانمونہ پیش کرنے کے ساتھ ان وسائل کی طرف بھی اشار ہ فرمایاجو بلندہمتی میں معاون بن سکتے ہیں۔ پروگرام کے روح رواں شیخ فیض اللہ مدنی نے ”ماہ صفر اور بدشگونی “کے موضوع پرجمعہ کا خطبہ دیا۔جس میں آپ نے فرمایاکہ اسلام ایک صاف ستھرا دین ہے جس میں ہر قسم کی توہمات اور بدشگونی وبدفالی کی شدید مذمت کی گئی ہے۔

پروگرام کی دوسری نشست میں شیخ عبدالحفیظ مدنی نے جہالت اور اس کے نقصانات کے موضوع پر خطاب کرتے ہوئے فرمایا کہ جہالت ایک مذموم صفت ہے ۔آپ نے امام احمد بن حنبل کا یہ قول بھی بیان فرمایاکہ لوگوںکوکھانااور پانی سے زیادہ علم کی ضرورت ہے ،اس لیے کہ ایک انسان دن میں ایک دوبار کھانے اورپانی کا محتاج ہوتا ہے جبکہ وہ سانس کی گنتی کے برابر علم کا محتاج ہے ۔ آپ نے یہ بھی واضح فرمایاکہ واجبی علم سے مراد توحید وسنت کا علم ہے اوراس علم کو نہ جاننے والے جاہل ہیں خواہ وہ دنیوی علوم کے ماہر ہی کیو ں نہ ہو ں۔

نمازعصر کے بعد شیخ فیض اللہ مدنی نے ’جنت اوراس کے حسین مناظر “پرپرُمغز خطاب فرمایاآپ نے جنت کے محلات اور خیموں ،جنت کے درختوں،جنت کی نہروں، جنت کی  من پسندغذاوں،جنت کی شراب ،جنت کے سایوں،جنت کی کشادگی اورجنت کی حوروںکا ایمان افروز تذکرہ کرتے ہوئے فرمایاکہ وہاں ایسی نعمتیں ملیں گی جنہیں نہ کسی آنکھ نے دیکھا ہوگا نہ کسی کان نے سنا ہوگا اورنہ کسی دل پر ان کا خیال گذرا ہوگا ۔ پروگرام کے آخری سیشن میںکویت میں مقیم معروف عالم دین اورخطیب شیخ عبدالخالق مدنی تشریف فرماتھے ، آپ نے انتظامیہ اورحاضرین کو دلی مبارکباد پیش کی اورلوگوںکوقرآن وسنت کی طرف رجوع کرنے اور اس کی شفاف تعلیمات سے اپنے گھر اورمعاشرہ کو منورکرنے کی ترغیب دلائی ۔

 پروگرام کا اختتام مختلف ثقافتی پروگراموں اورکھیل کود میں کامیاب ہونے والوںکے بیچ تقسیم انعامات پر ہوا ،اس پروگرام کو کامیاب بنانے میںچندباہمت نوجوانوںکا کلیدی رول رہا جو صبح سے شام تک حاضرین کی خدمت میں لگے رہے ۔ویڈیوریکارڈنگ،ظہرانہ کی تیاری ،حاضرین کے استقبال اورگیمزمیں انہوںنے اپنی فولادی قوتوںکا مظاہر ہ  کیا ۔جن میںابومریم بشیر ،بدرمنیر،محمدحنیف ،محمداقبال،سیداقبال ،محمدنورالدین ،محمدشریف ،عبدالناصر،ایوب، ذاکر، عبدالقادر،کلیم ، اعظم اورحنیف قابل ذکر ہیں ۔پروگرام کے سارے سیشن میں نظامت کے فرائض جناب محمدجامعی صاحب نے انجام دئیے ۔اس طرح یہ ایمان افروز تفریحی پروگرام شام چار بجے بحسن وخوبی اختتام کو پہنچا

Be the first to comment

Leave a Reply

Your email address will not be published.


*