امام حرم مدنی شیخ ایوب بن محمدیوسف

مبصرالرحمن القاسمی (کویت )

mubassir2008@yahoo.co.in

شیخ محمد ایوب بن محمد یوسف بن سلیمان مسجد قبلتین میں امام اور مسجد نبوی کے سابق امام ہیں۔ شیخ محمد ایوب سال 1372ھ میں مکہ مکرمہ میں پیدا ہوئے، اور حرم پاک میں پرورش پائی، ابتدائی تعلیم کا آغاز مکہ مکرمہ سے کیا، سال 1385ھ میں وزارت اوقاف سعودی عرب کے زیرسرپرستی جاری شعبہ تحفیظ القرآن مسجد بن لادن میں شیخ خلیل بن عبدالرحمن کے پاس حفظ قرآن کی تکمیل کی۔ حفظ قرآن کی تکمیل کے بعد مدینہ منورہ  میں واقع معھد المدینہ العلمی میں داخل ہوئے اور سال 1392 میں ثانویہ کی تعلیم سے فراغت حاصل کی۔

سال 1396ھ میں مدینہ منورہ اسلامک یونیورسٹی کے شریعہ کالج میں داخلہ لیا، اور بی اے کے بعد تفسیر اور علوم قرآن میں ماسٹر کی ڈگری حاصل کی۔

سال 1408ھ میں مدینہ منورہ یونیورسٹی کے مذکورہ کالج سے ڈاکٹریٹ کی ڈگری حاصل کی، آپ کے تحقیقی مقالے کا عنوان تھا ” سعید بن جبیر کی تفسیر میں روایات سورہ یونس سے سورہ ناس تک”

اعلی تعلیم سے فراغت کے بعد شیخ ایوب نے سال 1397 سے 1398ھ تک قران کالج میں معاون استاذ کی حیثیت سے خدمات سرانجام دی، نیز آپ شعبہ تفسیر میں تدریسی کمیٹی کے بھی رکن رہے۔

یونیورسٹی میں تدریسی خدمات کے علاوہ شیخ ایوب شاہ فہد کمپلکس برائے طباعت قرآن مجید میں علمی کمیٹی کے رکن بھی منتخب ہوئے۔


شیخ موصوف کو سرزمین حرمین کی متعدد مساجد میں امامت وخطابت کا شرف حاصل ہے۔ آپ سال 1410ھ میں مسجد نبوی میں معاون امام رہے، فی الحال مسجد قباء میں نماز تراویح اور قیام لیل میں امامت کے فرائض انجام دیتے ہیں۔

آپ نے برطانیہ کے شہر برمنگھم کی جامع مسجد میں بھی نماز تراویح کی امامت کی۔

 سال 1394 ھ سے 1403 ھ  تک  آپ مسجد العنابیہ میں امام رہے، اور پھر 1403 ھ سے مسجد عبداللہ الحسینی میں امامت کے فرائض انجام دے رہے ہیں۔ جبکہ خطبہ جمعہ محلہ شرقیہ میں واقع مسجد احمد بن حنبل میں دیتے ہیں۔

شیخ محمد ایوب نے سرکاری تعلیم کے علاوہ متعدد مشائخ اور علماء کرام سے علوم شرعیہ کی تعلیم حاصل کی۔ آپ کے شیوخ میں شیخ عبدالعزیز محمد عثمان، شیخ محمد سید طنطاوی، شیخ اکرم ضیاء العمری، شیخ محمد الامین الشنقیطی، شیخ عبدالمحسن العباد، شیخ عبداللہ محمد العتیمان اور شیخ ابوبکر الجزائری شامل ہیں۔

نیز آپ نے متعدد قراء سے اجازت بھی حاصل کی، شیخ القراء مدینہ منورہ حسن بن ابراہیم الشاعر، شیخ احمد عبدالعزیز الزیات اور شیخ خلیل بن عبدالرحمن القاری سے بروایت حفص اجازت حاصل کی۔

اسفار:

آپ نے برطانیہ سمیت بھارت، ترکی، پاکستان، سنیگال، مالیزیا وغیرہ ملکوں کے دعوتی اسفار کیئے۔

شیخ محمد ایوب کا عالم اسلامی کے مشہور ومعروف قراء میں شمار ہوتا ہے، شاہ فہد کامپلکس برائے طباعت قرآن مجید کی جانب سے آپ کی تلاوت تراویح پر مشتمل مکمل قرآن مجید کی کیسیٹوں کا سیٹ تیار کیا گیا۔

اسی طرح امام موصوف کا ایک مقالہ منظر عام پر آیا جو آپ نے حافظ محمود سیبویہ کی زندگی پر تحریر کیا تھا۔

Be the first to comment

Leave a Reply

Your email address will not be published.


*