جذباتی سرمایہ

  ڈاکٹر محمد عبدالرحمن العریفی

اپنی شخصیت کے بارے میں لوگوں کے ذہنوں میں تشکیل پانے والے تصورات ہم خود بناتے ہیں ۔ ایک آدمی اپنی پہلی اور سرسری ملاقات میں آپ سے سپاٹ یا بے تاثر چہرے کے ساتھ ملتا ہے توآپ کے حافظے میں اس کی سپاٹ شکل محفوظ ہوجائے گی ۔ اب آپ جیسے ہی اس کا نام (اگرآپ جانتے ہیں) سنیں گے یا اس کی تصویردیکھیں گے یا ا س سے ملاقات کریں گے تو وہی پہلی ملاقات والا سپاٹ چہرہ آپ کے ذہن کی تختی پر اُبھر آئے گا ۔

اسی طرح جو شخص مسکراتے ہوئے کشادہ چہرے سے آپ کو ملے گا اس کی وہی مسکراتی اور روشن صورت آپ کے ذہن میں بیٹھے گی ۔ یہ ان لوگوںکی بات ہے جن سے آپ کے دائمی تعلقات نہیں ہوتے اورسرِراہ ملاقات ہوتی ہے ، البتہ وہ اشخاص جن سے ہم ہمیشہ ملتے ہیں جیسے بیوی ،بچے ، دوست احباب ،محلے دار اوررشتے دار تو اُن سے ہمارا طرزعمل ایک ڈھنگ کا نہیں ہوتا ۔ وہ ہمیں ہنستے،روتے ، غصے کے عالم میں ،لڑتے جھگڑتے ہرحالت میںدیکھتے ہیں ۔ ہمارے لیے اِن افراد کی محبت جذباتی سرمائے کی مقدار کے برابر ہوتی ہے جو اُن کے اکاونٹ میں محفوظ ہوتا ہے ۔

جب آپ کسی انسان سے اچھا سلوک کرتے ہیں تو وہ اپنی یادداشت کی ڈائری میں آپ کے حوالے سے ایک خوبصورت یادکا اضافہ کرلیتاہے ۔دوسرے لفظوںمیں وہ اپنے دل میں ایک اکاونٹ کھولتا ہے جس میں آپ کے لیے محبت واحترام کے جذبات جمع کرلیتا ہے ۔ اب یہ آپ پر منحصر ہے کہ آپ اپنے لیے اس اکاونٹ میں جذباتی سرمائے کااضافہ کراتے ہیں یا کمی ۔ آپ جب بھی اسے مسکراکر ملیں گے یا تحفہ دیں گے ،اس کے اکاونٹ میں موجود جذباتی سرمائے میں اضافہ ہوتا جائے گا ۔ اس کے برعکس آپ اس سے توہین آمیز سلوک کریںگے تو وہ اپنے اکاونٹ میں آپ کے حوالے سے محفوظ جذباتی سرمائے کا کچھ حصہ نکال لے گا ۔

ہاں! آپ کا جذباتی سرمایہ اس کے اکاونٹ میں کثیر مقدار میں ہوگاتوکبھی کبھارکی تلخی یا ناراضی سے اس میں غیرمعمولی کمی نہیں آئے گی ۔ شاعرنے کہا ہے :

واذاالحبیب اتی بذنب واحد       جاءت محاسنہ بالف شفیع

”محبوب ایک غلطی کرتا ہے اوراس کی خوبیاں ہزار سفارشی لیے چلی آتی ہیں“۔

اوراگرآپ کے لیے اس کے اکاونٹ میں سِرے سے جذباتی سرمایہ موجودہی نہیں اورآپ اپنا سرمایہ نکالنے پر تُلے ہوئے ہیں تو آپ کے ذمہ قرض بڑھتا رہے گا ۔ یوں اس کے دل میں آپ کے لیے ناپسندیدگی آجائے گی کیوںکہ آپ اکاونٹ سے سرمایہ نکال تو رہے ہیں لیکن اس میں کچھ نہ کچھ ڈال نہیں رہے !!

اس لیے آپ نے جس شخص کے دل میں اپنی محبت کا اکاونٹ کھلوایا ہے ،اس اکاونٹ میں موجود جذباتی سرمائے میں اضافہ کرتے رہیے۔

حقیقت: ”دوسروں سے اچھائی اپنی ہی محبت میں اضافے کا باعث ہے “۔

Be the first to comment

Leave a Reply

Your email address will not be published.


*