دعوتی سرگرمیاں

ماہ رمضان میں 1214 لوگوں نے اسلام قبول کیا

”دعوت ہمارافرض منصبی ہے ….ہمارے ساتھ مل کر پہنچائیے “ کے بینر تلے امسال IPC نے ماہ رمضان میں اپنی دعوتی سرگرمیاں شروع کی تھیں ،اوراس کی تشہیر کویت کے متعددالیکٹرونک اورپرنٹ میڈیا میں کی گئی تھی،جس کے زیراثر الحمدللہ IPC کی تاریخ میں پہلی بار 1214 غیرمسلم مردوخواتین نے اسلام قبول کرنے کی سعادت حاصل کی۔

جواں سال داعی شیخ ارشدبشیر مدنی کی کویت تشریف آوری

’آسک اسلام پیڈیا‘کے ڈائرکٹر شیخ ارشدبشیر مدنی (ایم بی اے )کی کویت تشریف آوری کی مناسبت سے مختلف مسلم کمیونٹیز نے ان کے لیے دعوتی پروگرامزترتیب دئیے،شانتی سندیشم اورکڑپا سوسائٹی کے زیراہتمام وزارہ الاوقاف کے تعاون سے مسجد کبیر میں ان کا پروگرام رکھا گیا جس میںاردوداں تارکین وطن کی اچھی خاصی تعداد نے شرکت کی ،ریڈیوکویت کے ہفتہ وار پروگرام ’آج کے مہمان ‘ میںآپ کا انٹرویوبھی نشر ہوا اور IPC کے عربی ترجمان ماہنامہ ’بشری ‘ میںتین صفحات پرمشتمل ان کی دعوتی سرگرمیوںکا تفصیلی خاکہ شائع ہوا ۔اسی طرحIPC نے ان سے مسلمانوں اور غیرمسلموںکے لیے کئی ویڈیوز ریکارڈ کرائے ۔’آسک اسلام پیڈیا‘ ایک اسلامی پورٹل ہے جس کے وہ بانی اورسرپرست ہیں اوراسے لانچ کرنے کے لیے ان دنوں اپنی پوری ٹیم کے ساتھ سرگرم عمل ہیں۔ آپ ایک ابھرتے ہوئے جواںسال داعی ہیں ،جو کم عمری کے باوجوددینی اوردنیاوی دونوں میدان میں اپنالوہا منوا چکے ہیں۔

اسلامک ایجوکیشن کمیٹی کی سرگرمیاں

اسلامک ایجوکیشن کمیٹی کویت پورا سال قرآن کے درس و تدریس اور دعوت و تبلیغ کا فریضہ انجام دیتی ہے۔ لیکن رمضان میں خصوصی توجہ قرآن مجید سننے سمجھنے پر مرکوز ہو جاتی ہے۔ دارالقرآن فحاحیل کی مسجد میں قاری عبدالرحمن تراویح میں قرآن سناتے ہیں ،اس دفعہ ان کا ساتھ قاری صابر نے بھی دیا۔ انجنئیراطہر علی خان ان تلاوت شدہ آیات کی تفسیر بیان کرتے ہیں۔ فحاحیل کے مختلف علاقوں میں کیمپوں کے اندر ننھے حفاظ نے قرآن سنایا۔ جن میں عبدالودود، عبداللہ شفیق، عمر فاروق، مجتبی ہارون، معاذ الیاس اور عمار ضیاءنے یہ سعادت حاصل کی۔ کہنے کو تو یہ بچے تھے مگر ان کا جذبہ ، ولولہ ، ہمت اور لگن قابلِ ستائش تو ہے ہی قابلِ تقلید بھی ہے۔مسجد رافع ‘جلیب الشیوخ میں مولانا حافظ حفیظ الرحمن گذشتہ چند سالوں سے نمازِ تراویح میں قرآن سناتے ہیں اور پھر اسکی تفسیر بیان کرتے ہیں۔خیطان کی ایک مسجد میں حسب سابق مشتاق احمد کے صاحبزادے حافظ وجیہ الحسن نے قرآن سنایا۔ مسجد نقا العدوانی میں منیر احمد کے چشم و چراغ حافظ جاسم منیر قرآن سنانے والوں میں شامل تھے۔ اسی طرح عرفان سعید کے نورِ نظر حسان سعید نے ’الرای‘ کی ایک مسجد میں باقاعدگی کے ساتھ قرآن مکمل کیا ۔ کم عمرہونے کے باوجود اس کا جذبہ اور قرآن سے محبت دیدنی تھی۔قرآن سے تعلق اور محبت اور لگن کا جب بچوں تک کا یہ عالم ہو تو پھر خواتین پیچھے کیسے رہ سکتی ہےں۔ ان میں تو ویسے بھی دین سے محبت اور روحانی و ایمانی جذبہ مردوں کی نسبت زیادہ ہوتا ہے۔ چار جگہ ان کا دورہ¿ تفسیر رہا ،بہنیں پہلے قرآن کی تلاوت کرتیں پھر تلاوت شدہ آیات کا ترجمہ اور تشریح بیان کی جاتی۔ ان پروگراموں میں شرکاءخواتین کی تعداد توقع سے بھی زیادہ رہی ہے۔ (رپورٹ : محمد اطہر مخدوم)

انڈین مسلم ایسوسی ایشن کی دعوتی سرگرمیاں

انڈین مسلم ایسوسی ایشن کویت(IMA)مسجد کبیر کے تعاون سے کویت میں مقیم اردو جاننے والے انڈین کمیونٹی میں دعوت دین کا کام بڑی یکسوئی سے کر رہی ہے :٭رمضان المبارک کی آمد کے موقع پر ’استقبال رمضان ‘کا پروگرام مسجد یوسف العدسانی مالیہ میںمنعقد کیا گیا،جس میں جناب خلیل الرحمن چشتی، مولانا محمد طاہر مدنی‘مسجد کبیر کی طرف سے شعبہ¿ جالیات کے سید احمد التراوی اور دیگرمقررین نے خطاب کیا۔٭IMA یوتھ وینگ نے وزارة الاوقاف والشون الاسلامیہ کے تعاون سے”ہماری عبادتیں بے اثر کیوں ؟“ کے موضوع پر ایک مہم چلائی ، دوران مہم یوتھ وینگ کے افراد نے کویت کے مختلف مقامات ومساجد میں پروگرام کئے ، ذاتی ملاقاتیں کیں، ذمہ داروں سے ملے ،موضوع کے تحت کتابچے تقسیم کئے ، اس مہم کا اختتامی پروگرام افطار پارٹی کی شکل میں مسجد یوسف العدسانی مالیہ میں منعقد ہوا، مہمانِ خصوصی جمعیت الشیخ عبداللہ النوری کے منیجر جمال النوری نے شرکت کی۔
IMAکویت میں مقیم غیرمسلموں کے درمیان بھی اسلام کا پیغام پہونچانے کا خاص اہتمام کرتی ہے ، اسی غرض سے IMAنے غیرمسلموں کو مشترکہ افطار پارٹی میں مدعوکیا جس میںہندوستان سے آئے ہوئے وزارةالاوقاف والشﺅن الاسلامیہ کے مہمان جناب عبداللہ جاوید صدر جماعت اسلامی ہند صوبہ کرناٹکانے خطاب فرماتے ہوئے فرمایاکہ اسلام صرف مسلمانوں ہی کے لیے نہیں بلکہ تمام لوگوں کے لیے ہے۔٭IMA نے مسجد یوسف العدسانی میںجالیات کے لیے نماز عید کا اہتمام کیا،جناب شرف الدین صوفی نے نماز پڑھائی اوراردو میں خطبہ¿ عید دیا، تقریباً مردو خواتین اور بچوں کی کل تعداد تین ہزار تھی، نماز کے بعد نمازیوں میں سویاں تقسیم کی گئی۔سب نے اللہ تعالی کے شکرکے بعد امیر کویت ، ولی عہد اورتمام اہل کویت کا تہہ دل سے شکریہ اداکیا کہ ہم کوکویت میںجتنی سہولیات میسر ہیںشاید کسی ملک میں میسرنہ ہوں۔ اللہ تعالی اس ملک کو تادیر قائم ودائم رکھے آمین ۔ (رپورٹ :محمدخالداعظمی)

Be the first to comment

Leave a Reply

Your email address will not be published.


*