میری امی

میری امی، میری امی پیاری پیاری میری امی
کرتی ہوں اس کا اقرار وہ کرتی ہیں مجھ سے پیار
صبح مجھے اٹھاتی ہیں پیار سے ناشتہ بناتی ہیں
پھر کرتی ہے مجھ کو تیار ساتھ میں پیار بھی بے شمار
جب میں واپس آتی ہوں در پر ان کو پاتی پاتی ہوں
وہ کرتی ہیں میرا انتظار دیر ہونے پر ہوتی ہے بے قرار
مزے کا کھانا پکاتی ہیں اپنے ہاتھوں سے کھلاتی ہیں
ہوم ورک جب کرنے جاؤں امی کو ہی پاس میں پاؤں
مدد کو رہتی ہیں تیار پیار ا ن کا ہے بے شمار
رات کو پیار سے سلاتی ہیں ساتھ میں کہانیاں سناتی ہیں
فخر وہ مجھ پر کرتی ہیں مجھ پر جان چھڑکتی ہیں
گلالی (سوات، عمر 11 سال)

Be the first to comment

Leave a Reply

Your email address will not be published.


*