جذبات کا احترام کیجئے

مولاناصفی الرحمن مبارکپوری رحمه الله تعالى

عَن عَبدِاللّٰہِ بن مَسعُودٍ  رضى الله عنه قَالَ قَالَ رَسُولُ اللّٰہِ صلى الله عليه وسلم  اِذَا کُنتُم ثَلاثَةً فَلایَتَنَاجَ اثنَانِ دُونَ الآخَرِ، حَتّی تَختَلِطُوا بِالنَّاسِ مِن اجلِ انَّ ذٰلِکَ یُحزِنُہ  (متفق علیہ واللفظ لمسلم)

 ترجمة:  حضرت ابن مسعود رضى الله عنه  سے روایت ہے کہ رسول اللہ صلى الله عليه وسلم نے فرمایا: ”جب تم تین ہوتو دو آدمی تیسرے کو الگ کرکے سرگوشی نہ کریں ، تاوقتیکہ وہ لوگوں کے ساتھ مل جل نہ جائیں کیونکہ اس طرح یہ چیز اسے غمگین اور رنجیدہ خاطر کرتی ہے ۔“ (بخاری ومسلم اوریہ الفاظ مسلم کے ہیں )

تشریح : اس حدیث میں ساتھی کو نظر انداز کرکے کاناپھوسی اور سرگوشی کو ممنوع قرار دیا گیاہے ۔ جس سے انسانی جذبات واحساسات کااحترام ملحوظ رکھنے کا سبق ملتا ہے کہ ایسا کام انجام نہ دیاجائے جس سے دوسروں کو تکلیف ہوتی ہو اور اسے خیال گزرے کہ یہ مجھے اپنا نہیں بلکہ غیر تصور کرتے ہیں یا اسے کھٹکا اور اندیشہ پیدا ہوسکتا ہے کہ یہ دونوں میرے خلاف ساز باز کررہے ہیں اور مجھے دھوکہ دینے کی کوشش کررہے ہیں ۔ اس سے دوسرے کے جذبات واحساسات کو ٹھیس پہنچتی ہے۔ اس لیے جماعتی زندگی میں کانا پھوسی اورسرگوشی کرنا منع فرمایا گیا ہے ۔

Be the first to comment

Leave a Reply

Your email address will not be published.


*