آپس کی لڑائی سے بچنے کا اسلامی حل

 آج کل میاں بیوی، عزیز واقارب، خاندانوں اور معاشرہ میںلڑائی جھگڑے کی خطرناک بیماری عام ہے جسکے بے انتہا نقصانات ہیں مثلاً روزی میں  بے برکتی، آخرت کا عذاب، مال و جان کا نقصان، طلاق، قتل و غارت گری، آپس میں نفرت، بغض، ذ ہنی انتشار ، بلڈپریشراور امراض دل و دماغ وغیرہ ۔

 یہ بات یاد رکھیں کہ

 لڑائی کرانے والا شیطان ہے، اس لیے اصل لڑائی آپ کی شیطان سے ہے نہ کہ مخالف انسان سے۔ شکست شیطان کو دیجئے،یہی آپکی اصل جیت ہے۔ شیطان کا پہلا حملہ غصہ دلانا ہے۔

اس لیے: جب آپ کو غصہ آئے تو مند ر جہ ذیل کام کیجئے جس کی تعلیم قرآن و سنت میں ہے :

 (1)أعُوذُ بِاللہِ مِنَ الشَّیطٰانِ الرَّجِیمِ بار بار پڑھیں۔

(2) حالت بدل دیں۔ کھڑے ہوں تو بیٹھ جائیں، بیٹھے ہوں تو لیٹ جائیں۔

 (3) وضو کر کے2 رکعات نماز پڑھیں۔

 (4) سر پرٹھنڈا پانی ڈال لیں اور (کم از کم 2 گلاس پانی) پئیں بھی۔

 (5) سب سے پہلے دونوں فریق اپنے دل میں اللہ تعالیٰ کے عذاب کا ڈر پیدا کریں، دونوں علیٰحدگی میں (اختلافات دہرائے بغیر)اپنا اپنا حق اللہ تعالیٰ کی رضا حاصل کرنے کے لیے معاف کر کے اجر عظیم حاصل کریں ۔

(6)  آپس میں محبت سے ملیں،مصافحہ کریں، تحائف دیں، احسان کریں، ضرور ت مند ہو تو مالی تعاون بھی کریں۔

 (7) لڑائی کے دوران اور لڑائی کے بعد کسی بھی حالت میں جھوٹ نہ بولیں،جھوٹی گواہی اور جھوٹی قسم کھانا گناہ کبیرہ ہے۔

 (8) کبھی بھی لڑائی کو اَنا کا مسئلہ نہ بنائیں۔ نہ یہ سوچیں کہ میں بڑا ہوں، چھوٹے سے معافی کیوں مانگوں، اگر آپکی غلطی یا زیادتی ہو تو معافی مانگ لیں۔ اس عمل میں ہی آپکی بڑائی ہے۔ بد گمانی سے بچیں،والدین بیوی اور بچوں کے تمام جائز حقوق ادا کریں۔اسی طرح بیوی بھی شوہر کے تمام حقوق ادا کرے۔ سنی ہوئی باتوں پر یقین نہ کریں کیونکہ سنی سنائی باتیں بھی لڑائی کا سبب بنتی ہیں۔

(9) مصیبت آنے پر صبر اور نماز سے مدد لیں۔فرمان الٰہی ہے : ”اے ایمان والو! صبر اور نماز سے مدد لو۔“ (البقرہ 2 : آیت 153) بار بار نمازحاجت پڑھیں۔ اِن شاءاللہ جلد ہی بہتری آجائے گی۔

Be the first to comment

Leave a Reply

Your email address will not be published.


*